Sign Up

Sign In

Forgot Password

Lost your password? Please enter your email address. You will receive a link and will create a new password via email.

You must login to ask question.

ہماری ویب سائٹ پر آپ کا خیر مقدم ہے۔

Ask A Question

شمعِ رخِ احمدﷺ کا ہر ایک ہے پروانہ

شمعِ رخِ احمدﷺ کا ہر ایک ہے پروانہ
تا حشر زمانہ ہے سرکار ﷺ کا دیوانہ
دیدِ رخِ انور کے کب سے ہیں تمنائی
اے حسنِ ازل، جلوے آنکھوں میں بساجانا
محبوب زمانوں کا، رب کا وہ دلارا ہے
وہ نورِ مجسم ہے ، دلبر ہے وہ شاہانہ
ہیں محوِ تمنا بھی، یوں اے دلِ حیراں ہم
چشمانِ تمنا سے،دل میں بھی چلے آنا
توقیر بڑھی اس کی عزت بھی سوا دیکھی
جوعشقِ محمد میں خود سےہوابیگانہ
سرکارکی حرمت پر سب چاہنے والوں نے
کیا کچھ نہ کیا قرباں، جاں کا دیا نذرانہ
اس وقت دلِ عاصی پھولے نہ سماۓ گا
جس وقت شفاعت کا آ جاۓ گا پروانہ
ہونٹوں پہ سجا ہوگا محشر میں درود ان کا
اور ساتھ ادا ہوگا اک نعرۂِ مستانہ
میزان سجے گی جب اعمال کی، میداں میں
اس وقت دلِ حیراں محشر میں نہ گھبرانا
نازاں ہوں میں جس پروہ سرکارﷺکی مدحت ہے
بخشا مجھے مدحت کا اک اذنِ کریمانہ
روکے گا اگرکوئی سردارکی مدحت سے
زینب نہیں پاۓ گا دیدِ رخِ جانانہ